Weather (state,county)

Ab Kiya Likhain Hum Kaghaz Per?

 اب کیا لکھیں ہم کاغذ پر؟
اب لکھنے کو کیا باقی ہے؟
ایک دل تھا سو اب ٹوٹ گیا
لُٹنے کو اب کیا باقی ہے؟
ایک شخص کو ہم نے چاہا تھا
کچھ ریت پہ نقش بنایا تھا
وہ ریت تو کب کی بکھر گئی
وہ نقش کہاں اب باقی ہے؟
وہ جن کو ہم اپنی نظموں کا
عنوان بنایا کرتے تھے
وہ لفظوں کا بنا کے تاج محل
کاغذ پر سجایا کرتے تھے
وہ ہم کو اکیلا چھوڑ گیا
سب رشتوں سے منہ موڑ گیا
وہ رشتے سارے سُونے ہیں
وہ پیار کہاں اب باقی ہے؟
اب کیا لکھیں ہم کاغذ پر
اب لکھنے کو کیا باقی ہے؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔    
ab kiya likhain hum kaghaz per?
ab likhnay ko kiya baki hay?

aik dil tha so ab toot gaya
lutnay ko ab kiya baki hay

aik shakhs ko hum nay chaha tha
kuch raitt per naksh banaya tha

woh raitt tu kab ki bikhar gae
woh naksh kahan ab baki hai?

woh jin ko hum apni nazmo ka
unwan Banaya keartay thay

woh lafzo ka bana k taj_mahal
kaghaz per sajaya kertay thay

woh hum ko akela chor gaya
sab rishton say moo moor gaya

ab rishtay saray soonay hein
woh pyar kahan ab baki hay

ab kiya likhain hum kaghaz per
ab likhnay ko kiya baki hay...!+?
Powered by Blogger.