Weather (state,county)

Ay Parindo ! Kisi Shaam Urrtey Huey

اے پرندو !  کسی شام اُڑتے ہوئے
راستے میں اگر وہ نظر آئے تو
گیت بارش کا کوئی سنانا اُسے

اے ستارو! یونہی جھلملاتے ہوئے
اُس کا چہرہ دریچے میں آ جائے تو
بادلوں کو بُلا کر دکھانا اُسے

اے ہوا ! جب اُسے نیند آنے لگے
رات اپنے ٹھکانے پہ جانے لگے
اُس کے چہرے کو چھو کر جگانا اُسے

خواب سے جب وہ بیدار ہونے لگے
پھول بالوں میں اپنے پرونے لگے
میرے بارے میں کچھ نہ بتا نا اُسے

Ay Parindo  ! Kisi Shaam Urrtey Huey
Raastey Mein Agar Woh Nazar Aaey Tou
Geet Barish Ka Koi Sunana USay

Ay Sitaro  ! Yun He Jhilmilatey Huey
Uska Chehra Dareechay Mein Ajaey Tou
Baadlon Ko Bula Kar Dikhana USay

Ay Hawa  ! Jab USay  Neend Aaney Lagay
Raat Apne Thikaney Pay Janey Lagay
Us K Chehre Ko Chhoo Kar Jagana USay

Khuwaab Se Jab Woh Baidaar Hone Lagay
Phool Baalon Mein Apne Pironey Lagay
Mere Barey Mein Kuch Na Batana USay  ..........
Powered by Blogger.