Weather (state,county)

Bachpan Ke Din Kitne Ache The


بچپن کے دن کتنے اچھے ہوتے تھے
تب تو صرف کھلونے ٹوٹا کرتے تھے

وہ خوشياں بھی جانے کيسی خوشياں تھيں
تتلی کے پر نُوچ کے اُچھلا کرتے تھے

اپنے جل جانے کا احساس تک نہ تھا
آگ کے جلتے شعلے پکڑا کرتے تھے

پاؤں مار کے ہم بارش کے پانی ميں
اپنی ناؤ آپ ڈبويا کرتے تھے

چھوٹے تھے تو مکرو فريب بھی چھوٹے تھے
دانہ ڈال کے چڑيا پکڑا کرتے تھے

اب تو اِک آنسو بھی رُسوا کر جاتا ہے
بچپن ميں جی بھر کے رُويا کرتے تھے

خُوشبو کے اُڑتے ہی کيوں مرجھايا پھول
کتنے بھولے پن سے پوچھا کرتے تھے

کھيل کود کے دن بھر اپنی ٹولی ميں
رات کو ماں کی گُود ميں سويا کرتے تھے

Bachpan Ke Din Kitne Ache Hote The
Jab To Siraf Khilone Toota Karte The
Woh Khushian Bhi Kaisi Khushian Thi
Titlion Ke Par Noch Kar Uchala Karte The
Apne Jal Jane Ka Ihsas Tak Na Tha
Aag Ke Jalte Shoale Pakda Karte The
Paon Mar Ke Khud Barash Ke Pani Main
Apni Nao Aap Daboya Karte The
 Chote The To Makr-o-Fareb Bhi Choty The
Daana Daal Ke Chiryan Pakra Karte The
Ab To Ik Aansoo Bhi Ruswa Kar Jata Hay
Bachpan Main Jee Bhar Ke Roya Karte The
Khushbu Ke Urte He Q Murjhaya Phool
Kitne Bhoole Pan Se Poocha Karte The
Khel Kood Ke Din Bhar Apni Toli Mein
Rat Ko Maan Ki God Mein Soya Karte The
Powered by Blogger.