Weather (state,county)

Dayar-e-Dil Ki Rat Mein Charagh Sa Jala Gya


دیارِ دل کی رات میں چراغ سا جلا گیا
ملا نہیں تو کیا ہوا، وہ شکل تو دکھا گیا



جدائیوں کے زخم دردِ دل نے بھر دیے
تجھے بھی نیند آ گئی مجھے بھی صبر آ گیا


یہ صبح کی سفیدیاں،یہ دوپہر کی زردیاں
اب آئینے میں دیکھتا ہوں میں کہاں چلا گیا


پکارتی ہیں فرصتیں کہاں گیئں وہ صحبتیں
زمیں نگل گئی انہیں کہ آسمان کھا گیا


وہ دوستی تو خیر اب نصیبِ دشمناں ہوئی
وہ چھوٹی چھوٹی رنجشوں کا لطف بھی چلا گیا



یہ کس خوشی کی ریت پر غموں کو نیند آ گئی
وہ لہر کس طرف گئی یہ میں کہاں سماں گیا


گئے دنوں کی لاش پر پڑے رہو گے کب تک
 اُٹھو عمل کشو اُٹھو کہ آفتاب سر پہ آ گیا

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
Dayar-e-dil ki raat mein chirag sa jala gaya
mila nahi to kya hua wo shaql to dikha gaya
judaion ki zakhm dard-e-zindagi ne bhar diye
tujhe bhi neend aa gai mujhe bhi sabr aa gaya
ye subah ki safediyan ye dopahar ki zardiyan
ab aaine mein dekhata hun main kahan chala gaya
pukarati hain fursaten kahan gai wo sohabaten
zamin nigal gai unhen ya aasaman kha gaya
wo dosti to khair ab nasib-e-dushmanan hui
wo choti choti ranjishon ka lutf bhi chala gaya
ye kis khushi ki ret par gamon ko neend aa gai
wo lahar kis taraf gai ye main kahan sama gaya
gaye dinon ki lash par pade rahoge kab talak
utho amalkasho utho k aafatab sar pe aa gaya
Powered by Blogger.