Weather (state,county)

Gham Do Jahan Ke Hawale Hue Hain


جو محفل سے اُن کی نکالے ہوئے ہیں
غمِ دو جہاں کے حوالے ہوئے ہیں

ذرا تیرے گیسُو جو بکھرے ہیں رُخ پر
اندھیرے ہوئے ہیں، اُجالے ہوئے ہیں

یہ کون آ رہا ہے، کہ سب اہلِ محفل
متاعِ دل و جاں سنبھالے ہوئے ہیں

بڑا صاف تھا، راستہ زندگی کا
تری زُلف نے پیچ ڈالے ہوئے ہیں

یہاں سیف ہر دن قیامت کا دن ہے
وہ کس حشر پر بات ٹالے ہوئے ہیں
Powered by Blogger.