Weather (state,county)

Hum Musafir Youn He Masroof-e-Safar Jayen Ge


ہم مسافر یونہی مصروفِ سفر جائیں‌ گے
بے نشاں ہو گئے جب شہر تو گھر جائیں گے

کس قدر ہو گا یہـاں مہـر و وفـا کا ماتـم
ہم تری یاد سے جس روز اُتر جائیں گے

جوہری بند کئے جاتے ہیں بازارِ سخن
ہم کسے بیچنے الماس و گُہر جائیں گے

نعمتِ زیست کا یہ قـرض چُکے گا کیسے
لاکھ گھبرا کے یہ کہتے رہیں، مر جائیں ‌گے

شاید اپنا بھی کوئی بیت حُدی خواں بن کر
ساتھ جائـے گا، مـرے یار جدھـر جائیں گے

فیض آتے ہیں رہِ عشق میں جو سخت مقام
آنے والوں سے کہـو ہـم تو گـزر جائیں گے

فیض احمد فیض
Powered by Blogger.