Weather (state,county)

Main Khud Zameen Hun Mager Zarf Aasman Ka Hai


میں خود زمیں ہوں مگر ظرف آسمان کا ہے
کہ ٹوٹ کر بھی میرا حوصلہ چٹان کا ہے

بُرا نہ مان میرے حرف زہر زہر سہی
میں کیا کروں کہ یہی ذائقہ زبان کا ہے

ہر ایک گھر پہ مسلط ہے دِل کی ویرانی
تمام شہر پہ سایہ میرے مکان کا ہے

بچھڑتے وقت سے اب تک میں یوں نہیں رویا
وہ کہہ گیا تھا یہی وقت امتحان کا ہے

مسافروں کی خبر ہے نہ دُکھ ہے کشتی کا
ہوا کو جتنا بھی غم ہے وہ بادبان کا ہے

یہ اور بات عدالت ہے بےخبر ورنہ
تمام شہر میں چرچہ میرے بیان کا ہے

جو برگِ زرد کی صورت ہوا میں اڑتا ہے
وہ اک ورق بھی میری ہی داستان کا ہے

اثر دِکھا نہ سکا اُس کے دل میں اشک میرا
یہ تیر بھی کسی ٹوٹی ہوئی کمان کا ہے

بچھڑ بھی جائے مگر مجھ سے بدگمان بھی رہے
یہ حوصلہ ہی کہاں میرے بدگمان کا ہے

قفس تو خیر مقدر میں تھا مگر محسن
ہوا میں شور ابھی تک میری اُڑان کا ہے
Main Khud Zameen Hun Mager Zarf Aasmaan Ka Hai
Ke Toot Ker Bhi Mera Hosla Chataan Ka Hai

Bura Na Maan Mere Harf Zeher Zeher Sahi
Main Kia Kerun Ke Yehi Zaika Zubaan Ka Hai

Her Aik Ghar Pe Musalat Hai Dil Ki Veraani
Tamaam Sheher Pe Sayaa Mere Makaan Ka Hei

Bichertey Waqt Se Ab Tak Main Yun Nahi Royaa
Wo Keh Gaya Tha Yehi Waqt Imtehaan Ka Hai

Musafiroon Ki Khaber Hai Na Dukh Hai Kashti Ka
Hawa Ko Jitna Bhi Ghum Hai Wo Baad'baan Ka Hai
Ye or bat adaalat hai bekhabar warna
tmam sheher mein charcha mere byaan ka hai
Jo Barg-E-Zard Ki Surat Hawa Mein Urtaa Hai
Wo Ek Warq Bhi Meri Hi Daastaan Ka Hai

Aser Dikha Na Saka Uss Ke Dil Mein Ashk Mera
Ye Teer Bhi Kisi Tooti Hui Kamaan Ka Hai

Bicher Bhi Jaye Mager Mujh Se Be'Khaber Bhi Rahe
Ye Hosla Hi Kahaan Mere Bad'Gumaan Ka Hai

Qafas Tou Khair Muqadder Mein Tha Mager "MOHSIN"
Hawaa Mein Shorr Abhi Tuk Meri Uraan Ka Hai !....

Mohsin Naqvi
Powered by Blogger.