Weather (state,county)

Rasta Hi Neya Hai, Na Main Anjaan Bohat Hoon


رستہ ہی نیا ہے ، نہ میں انجان بہت ہوں
پھر کوئے ملامت میں ہوں ، نادان بہت ہوں

اک عمر جسے خواب کی مانند ہی دیکھا
چُھونے کو ملا ہے تو پریشان بہت ہوں

مُجھ میں کوئی آہٹ کی طرح سے کوئی آئے
اک بند گلی کی طرح سنسان بہت ہوں

دیکھا ہے گریز اُس نگاہِ سرد کا اتنا
مائل بہ توجہّ ہے تو حیران بہت ہوں

اُلجھیں گے کئی بار ابھی لفظ سے مفہوم
سادہ ہے بہت وہ نہ میں آسان بہت ہوں
Rasta hi neya hai, na main anjaan bohat hoon,
Phir kuye’malaamat mein hoon, nadaan bohat hoon,

Ik umar jisey khawab ki manind hi dekha,
Chooney ko mila hai to pareshaan bohat hoon,

Mujh mein kabhi aahat ki tarah se koi aye,
Ik band gali ki tarah sunsaan bohat hoon,
dekha hai guraiz us nigah-e-sard ka itna,
mayel ba tuwajja hai to hairaan bahut hoon,

Uljhen ke keyi baar abhi lafz se mafhoom,
Saada hai bohat woh, na main asaan bohat hoon..
Powered by Blogger.