Weather (state,county)

Shehar Ke Dukandaro


شہر کے دکاندارو
کاروبار الفت میں
سود کیا زیاں کیا ہے
تم نہ جان پاوگے

دل کے دام کتنے ہیں
خواب کتنے مہنگے ہیں
اور نقد جاں کیا ہے
تم نہ جان پاوگے

کوئی کیسے ملتا ہے
پھول کیسے کھلتا ہے
آنکھ کیسے جھکتی ہے
سانس کیسے رکتی ہے
کیسے رہ نکلتی ہے
کیسے باتیں چلتی ہیں
شوق کی زباں کیا ہے
تم نہ جان پاوگے
شہر کے دکاندارو

وصل کا سکوں کیا ہے
ہجر کا جنوں کیا ہے
حسن کا فسوں کیا ہے
عشق کا دروں کیا ہے
تم مریض دانائی
مصلحت کے شیدائی
راہ گم راہاں کیا ہے
تم نہ جان پاوگے
شہر کے دکاندارو

زخم کیسے پھلتے ہیں
داغ کیسے جلتے ہیں
درد کیسے ہوتا ہے
کوئی کیسے روتا ہے
عشق کیا ہے نالے کیا
دشت کیا ہے چھالے کیا
آہ کیا فغاں کیا ہے
تم نہ جان پاوگے
شہر کے دکاندارو

نامراد دل کیسے
صبح شام کرتے ہیں
کیسے زندہ رہتے ہیں
اور کیسےمرتے ہیں
تم کو کب نظر آئی
غمزدوں تنہائی
زیست بے اماں کیا ہے
تم نہ جان پاوگے
شہر کے دکاندارو

جانتا ہوں میں تم کو
ذوق شاعری بھی ہے
شخصیت سجانے میں
اک یہ ماہری بھی ہے
پھر بھی حرف چنتے ہو
صرف لفظ سنتے ہو
ان کے درمیاں کیا ہے
تم نہ جان پاوگے
شہر کے دکاندارو


Shehar Ke Dukandaro Karobaar-E-Ulfat Mein Sood Kia Zian Kia Hai, Tum Na Jaan Pao Gay
Dil Ke Daam Kitne Hein Khuwab Kitne Mehnge Hein Aur Naqd-E-Jaan Kia Hai Tum Na Jaan Pao Gay
Sheher Ke Dukandaron, Sheher Ke Dukandaron

Koi Kaisay Milta Hai Phool Kaisay Khilta Hai Aankh Kaisay Jhukti Hai Saans Kaisay Rukti Hai
Kaisay Reh Nikalti Hai Kaisay Baatein Chalti Hai Shouq Ki Zabaan Kya Hai, Tum Na Jaan Pao Gay
Sheher Ke Dukandaron, Sheher Ke Dukandaron

Wasl Ka Sukoon Kya Hai, Hijr Ka Junoon Kya Hai, Husn Ka Fusoon Kya Hai, Ishq Ke Daroon Kya Hai
Tum Mareez-E-Danai Maslihat Ke Shaydai Raah-E-Gumrahan Kya Hai, Tum Na Jaan Pao Gay
Sheher Ke Dukandaron, Sheher Ke Dukandaron

Zakhm Kaisay Phaltay Hein Daagh Kaisay Jaltay Hein Dard Kaisay Hota Hai Koi Kaisay Rota Hai
Ashq Kia Hai Nalay Kia Dasht Kia Hai Chalay Kia Aah Kia Fughaan Kya Hai, Tum Na Jaan Pao Gay
Sheher Ke Dukandaron, Sheher Ke Dukandaron

Namuraad Dil Kaisay Subah Shaam Kartay Hein Kaisay Zinda Rehtay Hein Aur Kaisay Martay Hein
Tum Ko Kab Nazar Aayi Ghamzadoon Ki Tanhai Zeest Be-Umaan Kia Hai, Tum Na Jaan Pao Gay
Sheher Ke Dukandaron, Sheher Ke Dukandaron

Janta Hoon Mein Tum Ko Zouq-E-Shaiyri Bhi Hai Shaksiyat Sayjanay Mein Ik Yeh Mahiri Bhi Hai
Phir Bhi Harf Chuntay Ho Sirf Lafz Suntay Ho In Ke Darmiyaan Kya Hai, Tum Na Jaan Pao Gay
Sheher Ke Dukandaron, Sheher Ke Dukandaron
Powered by Blogger.