Weather (state,county)

Tere Baghair Ab Yeh Zindagi Kahan Guzray


تیرے بغیر یہ اب زندگی کہاں گزرے
قدم قدم پہ تیرے ساتھ کا گماں گزرے

یہ دن جو دھیرے سے پھسلا تو شام کا منظر
تیرے بغیر ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اُداسی کے درمیاں گزرے

وہ اشک ہوں کہ سرِ راہ گِر گیا تھا کبھی
اُٹھا سکا نہ کوئی کتنے کارواں گزرے

میں خشک ہو کہ بِکھرتا رہا ہوں پیروں میں
بہت زمانہ ہُوا مجھ پہ کشتیاں گزرے

تیرے بدن کا آلاؤ ہو میری سانسوں میں
کبھی وہ لمحہ بھی اک بار جانِ جان گزرے

یہ بات اب بھی نہیں ہے کسی سے کہنے کی
تمام سجدے تیرے در سے رائیگاں گزرے
Powered by Blogger.