Weather (state,county)

Yeh Sumander Hai Kinarey Hi Kinarey Jao


یہ سمندر ہے کنارے ہی کنارے جاؤ                   
عشق ہر شخص کے بس کا نہیں پیارے جاؤ          

یوں تو مقتل میں تماشائی بہت آتے ہیں               
آؤ اس وقت کے جس وقت پکارے جاؤ               

دل کی بازی لگے پھر جان کی بازی لگ جاۓ    
عشق میں ہار کے بیٹھو نہیں ہارے جاؤ             

کام بن جاۓ اگر زلف جنوں بن جاۓ                
اس لیۓ اس کو سنوارو کہ سنوارے جاؤ           

کوئ رستہ کوئ منزل اسے دشوار نہیں            
جس جگہ جاؤ محبّت کے سہارے جاؤ             

ہم تو مٹّی سے اگائیں گے محبّت کے گلاب       
تم اگر توڑنے جاتے ہو ستارے جاؤ                

ڈوبنا ہو گا اگر ڈوبنا تقدیر میں ہے                  
چاہے کشتی پہ رہو چاہے کنارے جاؤ             

تم ہی سوچو بھلا یہ شوق کوئ شوق ہوا           
آج اونچائی پہ بیٹھو کل اتارے جاؤ                

موت سے کھیل کے کرتے ہو محبّت عاجز       
مجھ کو ڈر ہے کہیں بے موت نہ مارے جاؤ
Powered by Blogger.