Weather (state,county)

Mausam Ki Trah Rang Badalta Bhi Bahut Hai


موسم کی طرح رنگ بدلتا بھی بہت ہے
ہم زاد مرا قلب کا سادہ بھی بہت ہے

نفرت بھی محبت کی طرح کرتا ہے مجھ سے
وہ پیار بھی کرتا ہے رُلاتا بھی بہت ہے

وہ شخص بچھڑتا ہے تو برسوں نہیں ملتا
ملتا ہے تو پھر ٹوٹ کے ملتا بھی بہت ہے

خوشحال ہے مزدور بہت عہد رواں کا
ماتھے پہ مگر اس کے پسینہ بھی بہت ہے

برسا ہے سر دشت طلب ابر بھی کھل کر
سناٹا مری روح میں گونجا بھی بہت ہے

تم یوں ہی شریک غم ہستی نہیں ٹھہرے
سچ بات تو یہ ہے تمہیں چاہا بھی بہت ہے

اُٹھتی ہی نہیں آنکھ حیا سے کبھی اُوپر
دوپٹہ مگر سر سے ڈھلکتا بھی بہت ہے

ہر دُکھ کو تبسم میں اُڑا دیتا ہے احمد
بچوں کی طرح پھوٹ کے روتا بھی بہت ہے
...........................................
Mausam Ki Trah Rang Badalta Bhi Bahut Hai
ham-zaad mera qalb ka saada bhi bahut hai

Nafrat bhi muhabbat ki trah kerta hai mujh se
wo pyar bhi krta hai rulata bhi bahut hai
Woh shakhs bicharta hai to barson nhi milta
Milta hai to phir toot ke milta bhi bahut hai
Khush-haal hai mazdoor bahut ehd-e-rwaan ka
 mathey pe mager uss ke paseena bhi bahut hai
Barsa hai sar dasht-e- talab abr bhi khul kar
 san'nata meri rooh mein goonja bhi bahut hai
Tum youn Hi Shareek-e-ghum hasti nahin thehry
such bat to yeh hai tumhein chaha bhi bahut hai
Uth'ti hi nahin aankh kabhi hayaa se ooper
dopatta mager sar se dhalakta bhi bahut hai
Her dukh ko tabassum mein Urra deta hai Ahmed
bachon ki trah phoot ke rota bhi bahut hai
Powered by Blogger.